عالمی کمپنی کا پاکستان میں اربوں ڈالر کی سرمایہ کاری کا اعلان

وزیراعظم عمران خان کی شخصیت کی بدولت عالمی سرمایہ کاروں نے پاکستان کا رخ کر لیا

 

یہ بات تو واضح ہے کہ وزیراعظم عمران خان کی موجودگی میں عالمی سرمایہ کاروں کا پاکستان میں سرمایہ کاری کے حوالے سے اعتماد بڑھا ہے یہی نہیں بلکہ عالمی سربراہوں نے بھی پاکستان کی طرف توجہ دینے اور اس کی بات سننے کی زحمت گوارا کی ہے وگرنہ تو کوئی عالمی لیڈر پاکستان کے سربراہوں کو اہمیت ہی نہیں دیا کرتا تھا۔یہ عمران خان کی بدولت ہی ہے کہ عالمی سرمایہ کار جوق در جوق پاکستان کی طرف آ رہے اور بھاری سرمایہ کار کی پیشکش بھی کر رہے ہیں یوں پاکستان کی ڈوبتی معیشت کو بھی سہارا مل رہا ہے۔اب ایک اور عالمی کمپنی نے پاکستان میں اربوں ڈالر کی سرمایہ کاری کرنے کا اعلان کر دیا ہے۔ہالینڈ کی کمپنی رائل ووپاک نے پاکستان میں دو ارب 80کروڑ ڈالر یعنی 450 ارب روپے کی سرمایہ کاری کا اعلان کیا ہے۔

یہ سرمایہ کاری ایل این جی ٹرمینل کی تعمیر اور ایل این جی ذخیرہ کرنے کی سہولیات کے حوالے سے ہو گی، اس حوالے سے ڈچ کمپنی رائل ووپاک کے وفد نے منگل کو وزیراعظم کے مشیر برائے امور تجارت، صنعت و سرمایہ کاری عبدالرزاق داؤد سے ملاقات کی۔رائل ووپاک کمپنی دنیا بھر میں تیل، کیمیکل، خوردنی تیل اور قدرتی گیس سے متعلق مصنوعات کو ذخیرہ کرنے اور سنبھالنے میں مہارت رکھتی ہے۔وفد کے سربراہ نے مشیرا مور تجارت کو آگاہ کیا کہ رائل ووپاک پاکستان میں مشترکہ منصوبے کے ذریعے زمین پر ایک ارب 50کروڑ ڈالر لاگت کی سرمایہ کاری سے ایل این جی ٹرمینل کی تعمیر کرے گی جب کہ 15کروڑ ڈالر مالیت سے پروپلین پلانٹ اور 80کروڑڈالر کی لاگت سے پارکو کوسٹل ریفائنری قائم کی جائے گی جس سے ذخیرہ کرنے کی سہولت فراہم ہو گی۔رائل ووپک کے وفد کے سربراہ نے دونوں ممالک کے مابین طویل مدتی معاشی تعلقات قائم کرنے کے لئے پاکستان میں زیادہ سے زیادہ سرمایہ کاری کرنے کی خواہش ظاہر کی۔

Add a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *